Audio leaks of Pakistan government raise questions about cybersecurity

اسلام آباد: اتوار کو پاکستانی حکومت کے رہنماؤں کی آڈیو کلپس اور مبینہ گفتگو منظر عام پر آئی، جس سے اہم مقامات کی سیکیورٹی اور وہاں ہونے والی ملاقاتوں پر سوال اٹھ رہے ہیں۔ ایک کلپ میں بظاہر، سخت سکیورٹی والے وزیر اعظم ہاؤس میں حکمراں جماعت پاکستان مسلم لیگ نواز(پی ایم ایل-این) کے کئی سینئر رہنماؤں کے درمیان ہوئی گفتگو سنائی دے رہی ہے۔

جس میں وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ، وزیر دفاع خواجہ آصف، وزیر قانون اعظم تاراڑ اور وزیر اقتصادی امور ایاز صادق نے وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کی قسمت اور پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے اراکین قومی اسمبلی کے استعفوں پر بات کرتے ہوئے سنا جا سکتا ہے۔وہیں ایک اور آڈیو کلپ میں مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز اور وزیر اعظم شہباز شریف کے درمیان وزیر خزانہ اسماعیل کے بارے میں مبینہ ہوئی گفتگو سنائی دے رہی ہے۔ تین بار وزیر اعظم رہنے والے نواز شریف کی صاحبزادی مریم کا حکومت میں کافی اثر و رسوخ ہے اور وہ اسماعیل کی تنقید کرتی ہیں۔

مریم کواس میں کہتے ہوئے سنا جا سکتا ہے کہ وہ (اسماعیل) ذمہ داری نہیں لیتے ،ٹی وی پر عجیب و غریب باتیں کہتے ہیں، جس پر لوگ ان کا مذاق اڑاتے ہیں درمیان میں وزیراعظم شہباز کی آواز سنائی دیتی ہے۔مریم کو یہ کہتے ہوئے سنا گیا کہ انکل، وہ نہیں جانتے کہ وہ کیا کر رہے ہیں۔وہ مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما اسحاق ڈار کی واپسی کی بھی خواہش کرتی ہیں، جو کہ وزارت خزانہ کا چارج سنبھال چکے ہیں۔. دونوں کلپس سے پہلے آنے والے ایک کلپ میں، وزیر اعظم شہباز اور ایک نامعلوم اہلکار کو مریم کی خواہش کے بارے میں بات کرتے ہوئے سنا گیا ہے کہ ان کے ایک رشتہ دار کو ہندوستان سے کچھ مشینیں درآمد کرنے کی اجازت دی جائے۔حکومت نے لیک ہونے والے کلپ کے بارے میں کچھ نہیں کہا ہے لیکن اپوزیشن پی ٹی آئی پہلے ہی اس معاملے پر سوشل میڈیا پر جارحانہ ہے اور حکومت کی مذمت کر چکی ہے۔

پاکستان کے سابق وزیر اعظم اور پی ٹی آئی کے سربراہ عمران خان نے لیک آڈیو کلپ کیس میں نیا الزام لگا دیا ہے۔ عمران خان نے اتوار کو الزام لگایا کہ آڈیو کلپ سے ثابت ہوا ہے کہ مریم نواز کے داماد نے بھی غیر قانونی رقم کمائی ہے۔پاکستان کے شہر کرک میں ایک جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ ‘مریم نواز اسی لئے حکومت بناتی ہیں تاکہ وہ غیر قانونی کام کر سکیں۔ وائرل ہونے والی آڈیو کلپ سے ثابت ہو گیا ہے کہ ان کے داماد نے بھی غیر قانونی رقم اکٹھی کی ہے۔’ پی ٹی آئی رہنما اور سابق وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے الزام لگایا کہ حکمران جماعت خاندانی معاملات کو بچانے میں زیادہ دلچسپی رکھتی ہے۔