Thirteen reported killed as Iran Revolutionary Guards target dissident sites in Iraq

سلیمانیہ(عراق) : ایران کے پاسداران انقلاب نے کہا ہے کہ انہوں نے شمالی عراق کے کردستان علاقہ میں واقع انتہاپسندوں کے ٹھکانوں کو نشانہ بنا کرمیزائل و ڈرون حملے کیے جس میں ایرانی حکام کے مطابق 13افراد ہلاک ہو گئے۔

ایرانی حکام کے اس الزام کے بعد کہ ایران میں خاص طور پر شمال مغرب میں جہاں ایک کروڑ سے زائد کرد رہتے ہیں ہو رہے مظاہروں کو ہوا دینے میں کرد باغیوں کا ہاتھ ہے، یہ حملےکیے گئے۔ہلاک شدگان میں ایک حاملہ خاتون بھی شامل بتائی جاتی ہے۔

عراقی کردستان کے وزیر صحت کے مطابق اربیل اور سلیمانیہ میں کیے گئے ان حملوں میں13اکتوں کے علاوہ 32زخمی بھی ہوئے ہیں انہیں اربیل کے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔زخمیوں میں سے کچھ کی حالت نازک ہے جس سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد میں اضافہ کا خدشہ ہے۔ ان ڈرون حملوں میں سلیمانیہ کے قریب ان علاقوں میں جلاوطن ایرانی کرد وں کی تنظیم کے کئی دفاتر کو بھی نشانہ بنایا گیا۔