Mahsa Amini's death tragic but chaos unacceptable: Iran president amid raging protests

تہران:(اے یوایس ) ایران کے صدر ابراہیم رئیسی نے پولیس حراست میں نوجوان خاتون مہسہا امینی کی ہلاکت کو افسوسناک قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ اس موت نے ہم سب کو غمزدہ کر دیا ہے، تاہم انہوں نے انتباہ کیا ہے کہ امن و امان کو خراب کرنے اور افراتفری کا پھیلایا جانا ناقابل قبول ہے۔بدھ کے روز صدر رئیسی کا سرکاری ٹی وی کے ساتھ انٹرویو ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب پورے ملک میں امینی کی ہلاکت کے خلاف احتجاج جاری ہے۔

ابرہیم نے کہا کہ ان کی حکومت کی ترجیح ایرانی عوام کی سلامتی اور تحفظ ہے اور کسی کو بھی فساد برپا کر کے معاشرے کا امن و سکون درہم برہم کرنے کی ہر گز اجازت نہیں دی جائے گی۔واضح ہو کہ احتجاجیوں کے خلاف اشک آور گیس کے استعمال اور کئی مقامات پر لاٹھی چارج یہاں تک کہ فائرنگ میں ہلاکتوں میں بتدریج اضافہ کے باوجود سوشل میڈیا پر ایسے ویڈیو وائرل ہو رہے ہیں جس میں کریک ڈاو¿ن کے سائے میں ا یرانی مظاہرین ’مرگ بر آمر‘ کے نعروں کے ساتھ احتجاج کرتے نظر آرہے ہیں۔