Amit Shah’s J&K visit begins, reservation for Pahadi community on the cards

جموں : (اے یو ایس)مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ ایک خصوصی طیارے سے جموں و کشمیر کی تین روزہ دورے پر منگل کی صبح جموں پہنچ گئے۔جہاں وہ پہاڑی برادری کو شڈول ٹرائب کا درجہ دینے کے حوالے سے کوئی اعلان کریں گے۔جموں پہنچنے کے بعد انہوں نے ٹوئیٹ کیا کہ آج جموں و کشمیر کے تین روزہ دورے پر جموں پہنچ گیا۔ جموں و کشمیر کے عوام سے ملاقات بات کا متمنی اور شدت سے منتظر ہوں ۔اپنے دورے کے دوران شاہ منگل کے روز جموں خطہ کے راجوری ضلع میں اور بدھ کے روز شمالی کشمیر کے بارہمولہ میں عوامی جلسوں سے خطاب کریں گے۔جموں و کشمیر کو خصوصی دجہ دینے والی دفعہ370کے خاتمہ اور ریاست کو دو حصوں میں تقسیم کر کے انہیں مرکز کا زیر انتظٓام علاقہ بنائے جانے کے اعلان کے بعد ان دونوں مرکزی علاقوں کا پہلی بار دورہ کر رہے ہیں۔

واضح ہو کہ وزیر داخلہ کے دورے کے پیش نظر کسی بھی قسم کے ناخوشگوار واقعے کی روک تھام کو یقینی بنانے کے لئے جموں و کشمیر میں سیکورٹی کا فقیدالمثال بند وبست کیا گیاتھا۔ ذرائع کے مطابق جموں وکشمیر کی شاہراہوں اور دیگر لنک روڈس پر جہاں سیکورٹی فورسز کے عملے کی تعیناتی میں اضافہ کیا گیا وہیں سری نگر، بارہمولہ، راجوری اور دیگر علاقوں میں چیک پوائنٹس بھی بڑھا دئے گئے ۔پولیس ذرائع کے مطابق جموں و کشمیر میں بالعموم اور ان علاقوں میں خاص طور پر جہاں وزیر داخلہ ریلیوں سے خطاب کرنے والے ہیں، زبردست حفاظتی بندوبست کیاگیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ان علاقوں میں چیک پوائنٹس کی تعداد بڑھادی گئی ہے تاکہ وزیر داخلہ کا دورہ بحسن و خوبی اختتام پذیر ہوسکے۔ذرائع نے بتایا کہ بارہمولہ میں جہاں سیکورٹی نگرانی کو بڑھا دیا گیا ہے وہیں سیکورٹی فورسز کی مشترکہ ٹیمیں رات دن گشت کر رہی ہیں۔انہوں نے کہا کہ سری نگر میں بھی سیکورٹی کو مزید بڑھا دیا گیا ہے اور گشت کو تیز تر کر دیا گیا ہے اور اس کے علاوہ ڈرونز کے ذریعے بھی سیکورٹی نگرانی رکھی جا رہی ہے۔