Putin vows more ‘severe’ attacks after Russian missiles batter Ukraine

قیف : پیر کے روز یوکرین کے دارالخلافہ قیف اور کئی دیگر یوکرینی شہروں پر تسلسل سے روسی میزائیلوں کی بارش کے بعد، جسے امریکہ نے نہایت سفاکانہ قرار دیا، صدر ولادمیر پوتین نے مزید ہلاکت خیز حملوں کی دھمکی دی ۔ روسی الحاق شدہ جزیرہ نما کریمیا کو روس سے مربوط کرنے والے ایک اہم پل کو دھماکے سے نقصان پہنچانے پر جوابی کارروائی میں کیے گئے اس میزائیل حملے میں جسے مہینوں سے جاری جنگ میں اب تک کا سب سے بڑا اور ہولناک میزائل حملہ قرار دیا جا رہا ہے،11افراد ہلاک اور80سے زائد زخمی ہو گئے۔

اس میں کوئی شک نہیں کہ پوتین نے اپنی سلامتی کونسل سے خطاب میں، جسے براہ راست ٹیلی کاسٹ کیاگیا، کہا اگر دہشت گردانہ حملوں کی کوششیں جاری رہیں تو روس منھ توڑ اورتباہ کن جوابی کارروائی کرے گا۔

اقوام متحدہ نے روس کی جانب سے جزوی طور پر مقبوضہ یوکرینی مقبوضہ علاقوں کے الحاق پر تبادلہ خیال کرنے کے لیے ایک ہنگامی اجلاس بلایا تھا لیکن اس معاملہ پر ہونے والی یہ بحث یوکرین کے دارالخلافہ قیفاور دیگر شہروں پر ہونے والے ہلاکت خیز حملے کے ور میں کہیں گم ہو کر رہ گئی ۔یوکرین کے سینئر فوجی جنرل نے بتایا کہ روسی افواج نے ملک کے مختلف شہروں میں 75 میزائل، جن میں ایرانی ساختہ ڈرونز بھی شامل تھے، داغے۔