Qatar hires 3rd cruise ship as floating hotel for World Cup

دوحہ:(اے یو ایس ) قطر میں فٹ بال ورلڈ کپ کے منتظمین نے دوحہ پورٹ پر فٹ بال کے پرستار وں کے لیے ہوٹل کے طور پر استعمال ہونے کے لیے تیسرا کروز جہاز کرایے پر لے لیا ہے تاکہ ٹورنامنٹ کے دوران کھلاڑیوں، آفیشلز اور شائقین کے لیے کمروں کی تعداد میں اضافہ کیا جا سکے۔جنیوا میں قائم بحری جہازوں کی کمپنی ’ایم ایس سی کروزز‘ نے 20 نومبر کو شروع ہونے والے ورلڈ کپ سے چھ ہفتے قبل ایک معاہدے کا اعلان کیا، جس کے تحت 1075 کیبن والا ’ایم ایس سی اوپیرا‘ 19 نومبر سے 19 دسمبر تک قطرمیں دستیاب ہوگا۔

ایم ایس سی کی ویب سائٹ پر دی گئی معلومات کے مطابق فٹ بال کے گروپ مرحلے کے دوران کم از کم دو راتوں کے قیام کے لیے فی شخص کرایہ 470 ڈالر سے شروع ہوتا ہے۔قطر کے پاس ورلڈ کپ میں شامل تمام ٹیموں، کارکنوں، رضاکاروں اور شائقین کے لیے ہوٹلوں کی گنجائش کم ہے اور وہ اس ضرورت کو پورا کرنے کے لیے کیمپنگ اور کیبن سائٹس بنا رہا ہے۔کروز جہاز کرائے لیے جا رہے ہیں اور شائقین کو پڑوسی ممالک میں قیام کرنے اور وہاں سے کھیلوں کے لیے فضائی ذرائع سے آنے کی ترغیب دی جا رہی ہے۔

ایم ایس سی نے اس سے قبل 2019 میں قطری حکومت کے ساتھ ایک معاہدے پر دستخط کیے تھے، جس کے تحت لگ بھگ چار ہزار کیبنز کے ساتھ دو بحری جہاز تیرتے ہوئے ہوٹلوں کے طور پر فراہم کیے گئے تھے تاکہ وہاں آنے والے متوقع 12 لاکھ بین الاقوامی شائقین کو رہائش فراہم کی جا سکے۔ایم ایس سی کا اعلیٰ درجے کا بحری جہاز ’ورلڈ یوروپا‘ ورلڈ کپ کے لیے دستیاب ہو گا۔پاکستان کی جانب سے فیفا ورلڈ کپ کے لیے افواج کی فراہمی کے فیصلے کو غیر معمولی فیصلے کے طور پر لیا جا رہا ہے۔کروز بحری جہازوں کی قیمتیں ٹورنامنٹ کے دوران اس وقت گر جاتی ہیں جب نصف ٹیمیں وطن واپس چلی جاتی ہیں۔سولہ ٹیموں کے مرحلے اور کوارٹر فائنلز کے دوران، ایم ایس سی اوپیرا کے سب سے سستے کمروں کے کرائے 320 ڈالر ، پھر آخری ہفتے کے دوران 220 ڈالر ہوں گے۔کرائے میں ناشتہ شامل ہے، جس میں تمام کھانوں کے لیے 87 ڈالر روزانہ تک ادا کرنے کی پیش کش موجودہے۔