UK to block Chinese recruitment of British military pilots

لندن: برطانیہ کی حکومت نے کہاہے کہ وہ چین میں پیپلز لبریشن آرمی کے اہلکاروں کو تربیت دینے کے لیے حاضر سروس اور سابق برطانوی فوجی پائلٹوں کو بھرتی کرنے کی چین کی کوششوں کو روکنے کے لیے فیصلہ کن اقدامات کر رہی ہے۔ رپورٹس کے مطابق 30 سابق برطانوی فوجی پائلٹس کے بارے میں سمجھا جاتا ہے کہ وہ چینی فوج کے ارکان کو تربیت دینے گئے تھے اور رائل ایئر فورس اور دیگر مسلح افواج کے اہلکاروں کو خفیہ معلومات دے کر اس قسم کی بھرتی کی کارروائیوں کے خلاف الرٹ کیا جا رہا ہے۔

وزارت دفاع کے مطابق بھرتی کا عمل موجودہ برطانیہ کے قوانین کی خلاف ورزی نہیں کرتا، لیکن نیا قومی سلامتی بل اس طرح کے سیکیورٹی چیلنجز سے نمٹنے کے لیے اضافی اقدامات فراہم کراے گا۔ وزارت کے ترجمان نے کہا کہ ہم چین میں پیپلز لبریشن آرمی کے اہلکاروں کو تربیت دینے کے لیے حاضر سروس اور سابق برطانوی فوجی پائلٹوں کو بھرتی کرنے کی چین کی کوششوں کو روکنے کے لیے فیصلہ کن اقدامات کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہاتمام حاضر اور سابق افسران پہلے ہی آفیشل سیکرٹ ایکٹ کے تحت آتے ہیں اور ہم دفاعی شعبے میں رازداری کے معاہدوں اور غیر افشا کرنے والے معاہدوں کا جائزہ لے رہے ہیں۔ وہیںنیا قومی سلامتی بل عصری چیلنجز بشمول موجودہ چیلنجز سے نمٹا نے کے لئے موجودہ انتظامات فراہم کرائے گا۔انہوں نے کہا۔ افواج کے وزیر جیمز ہیپے نے اسکائی نیوز کو بتایا کہ چینی پائلٹوں کو تربیت دینے کے لیے برطانوی پائلٹوں کی بھرتی کئی سالوں سے وزارت دفاع کے لیے باعث تشویش بنی ہوئی ہے۔