Kishtwar to emerge as major hydropower centre in North India

جموں: مرکزی وزیر جتندر سنگھ نے کہا کہ جموں کا کشتواڑ شمالی ہندوستان میں بجلی پیدا کرنے والے مرکز کے طور پر ابھرا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ صرف وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت والی مرکزی حکومت کی وجہ سے ممکن ہوا ہے۔جتندر سنگھ نے کہا کہ ای ایکس وی آئی پاور پراجیکٹس کی وجہ سے 6000 میگاواٹ اضافی بجلی پیدا ہو رہی ہے۔ اس میں تازہ ترین کامیابی ماچل میں لگایا جانے والا سولر پراجیکٹ ہے اور اس سے ایک میگاواٹ بجلی حاصل ہو رہی ہے۔ جس کی وجہ سے ماچل جانے والے مسافروں کو کافی سہولت مل رہی ہے۔جتیندر سنگھ نے کشتواڑ میں دیشا کے تحت منعقدہ اجلاس سے خطاب کیا۔

میٹنگ میں ڈی ڈی سی کی چیئرپرسن پوجا ٹھاکر، میونسپل کونسل کے صدر سجاد احمد اور کئی دیگر معززین موجود تھے۔اس دوران ڈی سی کشتواڑ نے لوگوں کو سائنس سنٹرل اسکیموں کے بارے میں جانکاری دی اور اس کے تحت ہونے والے کاموں اور ترقی کے بارے میں بھی جانکاری دی۔ساتھ ہی انہوں نے کشتواڑ میں بن رہی ہوائی پٹی کے کام کے بارے میں بھی تفصیلی جانکاری دی۔ انہوں نے کہا کہ کوڈل کی مختلف رسمی کارروائیاں مکمل کر لی گئی ہیں اور تکنیکی ٹیم کی آمد کے بعد منصوبے کو حتمی شکل دی جائے گی۔

سنگھ نے اس بات پر زور دیا کہ ماچل اور سرتھل کو ٹورازم اور مشن یوتھ کے تحت لایا جانا چاہیے تاکہ نوجوانوں کو فائدہ پہنچایا جا سکے۔ سنگھ نے کہا کہ کشتواڑ میں آنے والے وقت میں پانی کے پانچ بڑے پروجیکٹ شروع کیے جائیں گے اور اس سے مرکزی خطہ اور ملک کو بہت فائدہ پہنچے گا۔قبل ازیں مرکزی وزیر نے ‘ممکن’ اسکیم کے تحت کمرشل گاڑیوں کی چابیاں بھی تقسیم کیں، انہوں نے محکمہ سماجی بہبود کے سروے کے تحت خصوصی طور پر معذور افراد کو موٹرسائیکلیں بھی تقسیم کیں۔