Morbi bridge collapse: PM Modi orders extensive investigation

احمد آباد:(اے یو ایس ) وزیر اعظم نریندر مودی نے منگل کو موربی پل حادثہ کے متاثرین سے ملاقات اور جائے واقعہ کا دورہ کرنے کے بعد موربی میں ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ کی صدارت کی ، جس میں حادثہ کے بعد کی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔ اس میٹنگ کے دوران وزیر اعظم مودی نے کہا کہ افسران کو متاثرہ کنبوں کے رابطے میں رہنا چاہئے اور اس بات کو یقینی بنانا چاہئے کہ اس دکھ کی گھڑی میں انہیں ہر ممکن مدد ملے۔ وہیں اس دوران افسران نے وزیر اعظم کو بچاو کاموں اور متاثرہ لوگوں کو دی جانے والی امداد کے بارے میں جانکاری دی۔وزیر اعظم مودی نے کہا کہ وقت کا تقاضہ ہے کہ ایک تفصیلی اور جامع جانچ کی جائے، جو اس حادثہ سے متعلق سبھی پہلووں کی نشاندہی کرے گی۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ جانچ سے ملے اہم سبق کو جلد از جلد لاگو کیا جانا چاہئے۔

اس میٹنگ میں وزیر اعلی بھوپیندر پٹیل، ہرش سنگھوی ، گجرات سرکار میں وزیر برجیش میرجا ، گجرات کے چیف سکریٹری ، ریاست کے ڈی جی پی ، مقامی کلکٹر ، ایس پی سمیت متعدد اہلکاروں نے شرکت کی۔اس سے پہلے موربی پہنچنے پر وزیر اعظم مودی نے پل حادثہ کی جگہ کا دورہ کیا۔ وزیر اعظم مودی موربی ضلع کے استپال میں بھی گئے ، جہاں انہوں نے زخمیوں کی کیفیت کے بارے میں معلومات حاصل کی۔ بتادیں کہ اتوار کی دیر شام کو مچھو ندی پر واقع ہینگنگ برج گر جانے سے 135 لوگوں کی موت ہوگئی۔بتایا جارہا ہے کہ حادثہ کے وقت تقریبا چار سو لوگ پل پر موجود تھے۔ پچھلے دو دنوں سے ریسکیو آپریشن چلایا جارہا ہے۔

اس آپریشن میں این ڈی آر ایف ، ایس ڈی آر ایف، فوج کے جوانوں کے ساتھ ساتھ مقامی پولیس بھی مصروف ہے۔ اس حادثہ نے پورے ملک کو جھنجھوڑ کرکے رکھ دیا ہے۔ دنیا بھر کے سیاستدانوں نے اس واقعہ پر اپنے غم کا اظہار کیا ہے۔ دریں اثنا گجرات حکومت نے موربی پل حادثے کے متاثرین کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے آج 2 نومبر کو ریاست بھر میں سوگ کا اعلان کیا ہے۔ یہ فیصلہ سانحہ کے بعد کی صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے وزیر اعظم نریندر مودی کی صدارت میں ہونے والی میٹنگ میں لیا گیا ۔گجرات کے وزیر اعلی بھوپیندر پٹیل نے ٹویٹ کیا کہ گجرات حکومت نے 2 نومبر کو ریاست بھر میں سوگ منانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ریاست میں (قومی) جھنڈا آدھا جھکا رہے گا اور کوئی سرکاری تقریب نہیں ہوگی۔موربی پل حادثے میں 170 افراد کو بچا لیا گیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی 152 لوگوں کو علاج کے بعد اسپتال سے چھٹی دے دی گئی ہے۔