UK defense ministry: Russia's lack of air superiority exacerbated due to poor training

لندن:(اے یو ایس ) برطانیہ کی وزارت دفاع نے کہا ہےکہ یوکرین پر حملوں کے دوران روس کے فضائی عملے کے تجربہ کار ماہرین کا نقصان، روس کی فضائی برتری کے فقدان کی وجہ ہو سکتا ہے، جس میں ممکنہ طور پر ناقص تربیت کی وجہ سے مزید اضافہ ہوا ہے۔ ٹوئٹر پر پوسٹ کی گئی ایک اپ ڈیٹ میں برطانیہ نے کہا کہ اگلے چند مہینوں میں روس کی فضائی اہلیت میں تبدیلی کا امکان نہیں ہے۔ پوسٹ کے مطابق روس کے طیاروں کے نقصانات ممکنہ طور پراس کی نئے ایئر فریم بنانے کی صلاحیت سے کہیں زیادہ ہیں۔

خیر سون میں اتوارکو، رہائشی علاقے روشنی اور پانی کے بغیر تھے، اور شہر میں روس کے تعینات کردہ اہلکاروں نے کوئی ثبوت دیے بغیر یوکرین کو تخریب کاری کے لیے مورد الزام ٹھیرایا۔کریملن کے حمایت یافتہ عہدیداروں نے کہا کہ یوکرین کے ایک حملے میں ہائی وولٹیج پاورلائنوں کو نقصان پہنچا ہے۔

ایجنسی فرانس پریس کے مطابق حکام نے کہا کہ توانائی کے ماہرین اس مسئلے کو جلد از جلد حل کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں۔دوسری طرف یوکرین میں خیر سون ریجنل انتظامیہ کے سربراہ یاروسلاو یانوشیوچ نے روس کو بجلی منقطع ہونے کا ذمہ دار ٹھہرایا۔یانوشیوچ نے کہا کہ عارضی طور پرروس کے زیر قبضے والے علاقےبرسلاو میں، روسی فوجیوں نے ہائی پاور والی بجلی کی لائنوں کو اڑا دیا۔ تقریباً ڈیڑھ کلومیٹر کے علاقے میں بجلی کے کھمبے اور لائنیں تباہ ہو گئیں۔ اے ایف پی کے مطابق، انہوں نے مزید کہا کہ’نقصان کافی وسیع ہے۔یوکرین کے صدر ولادی میر زیلنسکی اور دیگر عہدہ داروں نے گزشتہ ماہ کہا تھا کہ روسی فضائی حملوں سے یوکرین کا توانائی کا بنیادی ڈھانچہ 30 سے 40فیصد کے درمیان تباہ ہو چکا ہے ۔