Joe Biden to meet Xi Jinping on November 14 for Taiwan, Russia talks

واشنگٹن: وائٹ ہاؤس سے جاری ایک بیان میں مطابق انڈونیشیا کے شہر بالی میں آئندہ ہونے والی جی 20سربراہ اجلاس میں فرصت کے لمحات میں چینی صدر شی ن پینگ سے ملاقات کر یں گے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان بتدریج کشیدہ ہوتے تعلقات کے درمیان دونوں رہنماؤں کی یہ بالمشافہ ملاقات پیر کے روز ہو گی۔جو کہ جنوری2021میں بائیڈن کے صدر منتخب ہونے اور شی جن پینگ کی صدر کے عہدے پر برقرار رہنے کے لیے تیسری بار مزید 5برس کی میعاد دیے جانے کے بعد پہلی ایسی ملاقات ہے جس میں دونوں رہنما آمنے سامنے بیٹھ کر بات کریں گے۔

وائٹ ہاؤس کے ایک سینیر عہدیدار نے کہا کہ ملاقات کے دوران یہ امر بھی متوقع ہے کہ دونوں رہنمایوکرین میں روس کی فوجی چڑھائی اور شمالی کوریا پر بھی بات کریں گے ۔

واضح ہو کہ چین اور امریکا کے درمیان تعلقات جو پہلے ہی سے کشیدہ تھے اس وقت اور بھی زیادہ بگڑ گئے جب امریکی ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پیلوسی نے رواں برس اگست میں تائیوان کا، جس پر چین اپنا علاقہ ہونے کا دعویٰ کرتا ہے، دورہ کیا تھا۔امریکی انتظامیہ کے ایک سینئر اہلکار نے اپنا نام صیغہ راز میں رکھنے کی شرط پر بتایا کہ نے کہا کہ ملاقات کا کوئی مشترکہ اعلامیہ جاری نہیں ہوگا بلکہ صدر جو بائیڈن کا مقصد تعلقات کے لیے زمین ہموار کرنا ہے ۔