S Jaishankar's message reaffirms India's stand on Ukraine war

واشنگٹن:: ہندوستان کے وزیر خارجہ ایس جے شنکر ے حالیہ دورہ ماسکو میں روس – یوکرین جنگ کے حوالے سے دئیے گئے پیغام کا امریکہ نے حمایت کی ہے۔ امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نیڈ پرائس نے کہا کہ جے شنکر کا روس کو پیغام وزیر اعظم مودی کی جانب سے اس سے پہلے دئیے گئے بیان سے مختلف نہیں تھا۔ مودی نے روسی صدر ولادیمیر پوتن سے کہا کہ یہ جنگ کا دور نہیں ہے۔ امریکی ترجمان نیڈ پرائس نے کہا کہ ہندوستان نے ایک بار پھر یوکرین جنگ کے خلاف اپنی رائے کا اظہار کیا ہے۔ وہ اس جنگ کو سفارت کاری اور بات چیت کے ذریعے ختم کرنا چاہتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ روسی عوام کو ہندوستان جیسے ممالک کا پیغام سننا چاہئے جن کے پاس اقتصادی، سفارتی، سماجی اور سیاسی طاقت ہے۔ انہوں نے کہا کہ پی ایم مودی نے اقوام متحدہ میں صاف کہہ دیا تھا کہ یہ جنگ کا وقت نہیں ہے۔ روس کو جے شنکر کا تازہ پیغام ہمیں اس سے مختلف نہیں نظر آتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی نیڈ پرائس نے ہندوستان کو خبردار کیا کہ روس توانائی اور سیکورٹی امداد کے بارے میں قابل بھروسہ نہیں ہے۔ اگر ہندوستان وقت کے ساتھ روس پر اپنا انحصار کم کرتا ہے تو یہ نہ صرف یوکرین یا خطے کے مفاد میں ہو گا بلکہ یہ ہندوستان کے اپنے دو طرفہ مفاد میں بھی ہو گا، یہ ہم نے روس کے رویے کو دیکھتے ہوئے محسوس کیا ہے۔ امریکی ترجمان نے یہ بات پریس کانفرنس میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں کہی۔

نیڈ پرائس نے کہا کہ امریکہ نے ہندوستان کے ساتھ ہر شعبے میں شراکت داری کو مضبوط کیا ہے۔ ان میں اقتصادی، سیکورٹی، فوجی تعاون شامل ہیں اس سے قبل، جے شنکر نے ماسکو میں روس سے تیل کی درآمد کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال پر کہا تھا کہ ہندوستان اور روس کے تعلقات فائدہ مند رہے ہیں، اس لیے میں اسے جاری رکھنا چاہوں گا ۔ جے شنکر بدھ کی صبح ماسکو سے واپس آئے ہیں ماسکو میں انہوں نے روسی وزیر خارجہ سرگئی لاوروف اور روسی نائب وزیر اعظم اور وزیر صنعت و تجارت ڈینس مانتوروف سے ملاقات کی اور بات چیت کی۔