UAE denies it is engaging in discussion with other OPEC+ members to change their latest agreement

ابوظہبی:(اے یو ایس ) متحدہ عرب امارات نے اس امرکی تردید کی ہے کہ اوپیک پلس کے معاہدے سے ہٹ کر کوئی فیصلہ کرنے جا رہا ہے۔ یہ بات وزیر اماراتی توانائی وزیر نے گذشتہ روز کہی ہے۔وزیر توانائی نے کہا کہ یہ بات درست نہیں ہے کہ امارات کسی ایسی بات چیت میں شریک ہے جس کا مقصد اوپیک اور اس کے دوسرے ساتھیوں کے فیصلے میں تبدیلی لانا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اوپیک پلس کا تیل کی پیداوار میں کمی کا فیصلہ 2023 کے کے اواخر تک کے لیے ہے۔

امارات کے وزیر نے کہا کہ ہم آج بھی اوپیک پلس کے اس فیصلے کے پابند ہیں جس کا مقصد تیل کی پیداوار اور مارکیٹ کے درمیان توازن رکھنا ہے۔ وزیر توانائی سہیل محمد المزروئی نے کہا ‘ ہم اوپیک پلس کے اہداف پورے کرنے کے اوپیک پلس کے ساتھ ہیں۔ ‘امریکی اخبار وال سٹریٹ جرنل نے پیر کے روز رپورٹ کیا تھا کہ اوپیک کے اگلے اجلاس میں تیل کی پیداوار میں پانچ لاکھ بیرل یومیہ اضافے پر غور کیا جائے گا۔ یہ اجلاس 4 دسمبر کو متوقع ہے۔