Tension increase at Pak Afghan border in Chaman

کوئٹہ:(اے یو ایس )بلوچستان کے علاقے چمن میں شہری آبادی پر افغان بارڈر فورسز کی جانب سے گولے گرنے سے کم از کم 7 افراد ہلاک اور 26 زخمی ہوگئے ہیں۔اس واقعے کے بعد پاکستان کی حکومت نے افغانستان طالبان کو اےک احتجاجی نوٹ بھےجا اور کہا کہ ایسے واقعات دوبارہ نہ ہوئے کیونکہ اس سے حالات خراب ہونے کی اندیشہ ہے۔ پچھلے کئی مہینوں سے آئے دن افغانستان سے مسلح افراد سرحد پار کرکے قبائلی علاقو ں میں داخل اپنی دہشت گرد سرمیاں بڑھا رہی ہیں ۔

ضلعی انتظامیہ کے مطابق گزشتہ روز معمولی زخمی 12 شہریوں کو طبی امداد کے بعد ان کے گھروں کی جانب روانہ کر دیا گیا تھا۔افغان گولہ باری کے 14 شدید زخمیوں کو گزشتہ روز کوئٹہ منتقل کر دیا گیا تھا، سول اسپتال کوئٹہ میں داخل زخمیوں میں سے 4 کی حالت نازک ہے۔واقعے کے بعد پاک افغان سرحد باب دوستی کو ہر قسم کی آمد و رفت کے لیے بند کر کے دو طرفہ تجارت معطل کر دی گئی تھی۔افغان فائرنگ و گولہ باری سے متاثرہ علاقے میں اب بھی خوف و ہراس پایا جاتا ہے، جہاں لوگ گھروں میں محصور ہیں۔