Pakistan’s Taliban problem is America’s too

اسلام آباد:(اے یو ایس )امریکہ کے اعلی فوجی کمانڈر جنرل مائیکل کوریلا نے کہا کہ کالعدم تحریک طالبان پاکستان میں بڑھتے ہوئے حملے پر انہیں تشویش ہے۔ اور کہا کہ امریکہ پاکستان کو دہشت گردی کے خلاف لڑنے کے لئے ہر ممکن مددکرے گی ۔ جنرل مائیکل جو کہ امریکی فوج کے وسطی کمانڈ کے سربراہ ہیں۔ تحریک طالبان پاکستان کی سلامتی کے لئے خطرہ ہے اس سلسلے میں انہوں نے حال ہی میں پاکستان کے اعلی فوجی قیادت سے تبادلہ خیال بھی کیا ۔ اور دہشت گردی کو ختم کرنے کے لئے تعاون بھی پیش کیا ۔ امریکی فوجی جنرل کاد ورہ اس وقت پیش آیا جب افغانستان اور پاکستان میں سرحدی تناﺅ بڑھ گیا اور کئی دفعہ دونوں ملکوں کے فوجیوں کے درمیان فائرنگ بھی ہوئی ۔

انہوں نے کہا کہ نئے فوجی سربراہ جنرل عاصم منیر کے ساتھ وہ رابطے میں ہیں۔ اور ہم علاقائی صورتحال پر نظر رکھے ہوئے ہیں۔ جنرل مائیکل نے خیبرپاس کا دورہ کیا تا کہ اسے علاقے سےکورٹی صورتحال کا پتہ چلے۔ انہو ںنے کہا کہ پاکستان اور امریکہ کو مل کر ان خطرات کا سامنا کرنا چاہئے۔ جو خطے میں موجود ہیں۔ اپنے پاکستان دورے کے دوران انہو ںنے فوجی سربراہ عاصم منیر کے علاوہ جنرل ساحر شمشاد مرزا کے ساتھ بھی بات چیت کی اور پشاور کمانڈکا بھی دورہ کیا ۔ امریکہ اور پاکستان کے تعلقات کے بارے میں انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان تارےخی تعلقات ہیں اورجمہوری پاکستان کا امریکہ قدر کررہا ہے۔