UN chief 'deeply alarmed' by Taliban university ban for women

اقوام متحدہ:(اےیو ایس )اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس نے کہا کہ افغانستان اور پاکستان مےں خطرہ بننے والے ان دہشت گرد گروپوں کی سرگرمیوں کو روکیں جو افغانستان کے پڑوسی ممالک خاص طور پر پاکستان کے لیے خطرہ بنے ہوئے ہیں۔ان کا مزید کہنا تھا کہ ہم طالبان حکام کے ساتھ بات چیت جاری رکھے ہوئے ہیں اور ہم یہ سمجھتے ہیں کہ طالبان کے لیے یہ بہت ضروری ہے کہ وہ ایسی کسی بھی قسم کی دہشت گردا سرگرمی کی اجازت نہ دیں جس کا اثر پاکستان اور خطے کے کسی دوسرے ملک پر ہو۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل گوتریس نے عالمی برادری سے طالبان کے وعدوں کے حوالے سے کہا کہ طالبان کو اقتدار کے ڈھانچے میں ملک کے مختلف نسلی گروہوں کو شامل کرنے میں پیش رفت کرنی چاہیے اور تمام نسلی گروہوں کو نمائندگی دینی چاہیے۔انہوں نے مزید کہا کہ انسانی حقوق کے حوالے سے ضروری ہے کہ طالبان خاص طور پر خواتین اور لڑکیوں کے حقوق کا احترام کریں، خواتین کو کام کرنے کا حق اور لڑکیوں کو ہر سطح پر تعلیم حاصل کرنے کا حق دیں۔