Syrian man given 16-year prison sentence in Denmark for Daesh/ISIS ties

کوپن ہیگن:(اے یو ایس ) ڈنمارک میں داعش کے ساتھ ہمدردی رکھنے والے شامی شہری کو16سال قید کی سزا سنا دی گئی۔ یہ پہلا موقع پے کہ کسی شخص کو ان بنیادوں پر عمر قید کی سزا ڈنمارک کی عدالت کی طرف سے سنائی گئی ہے۔اس 35 سالہ شامی شہری علی المصری کو عدالت نے دہشت گردانہ کوشش کرنے کے جرم کا مرتکب قرار دیا نیز داعش کو مالی امداد بھیجنے کا جرم وار قرار دیاہے۔ اسے ڈنمارک اور جرمنی کی مشترکہ کارروائی کے دوران فروری 2021 میں گرفتار کیا گیا تھا۔

ڈنمارک کے پراسکیوٹر جان کیٹر نیلسن نے کہا ہے کہ ہم سمجھتے ہیں کہ ان گرفتاریوں کی وجہ سے ہم نے کئی حملے ناکام بنا دیے ہیں۔عدالت سے سزا پانے والے 35 سالہ علی المصری نے عدالت کے سامنے صحت جرم سے انکار کیا تھا اور اپپنے کمرے میں رکھے گئے بارہ کلو بارودی سامان کو آتش بازی کے لیے قرار دیا تھا۔علی المصری کے علاوہ اس کی عراقی نژاد ڈینش بیوی اور بڑے بھائی کو بھی اس کے ساتھ تعاون کے جوم میں بالترتیب ماہ اور 6 ماہ کی سزا سنائی گئی ہے۔ جبکہ بھائی کو سزا بھگتنے کے بعد ڈنمارک سے ملک بدر کر دیا جائے گا۔