India, UAE close to deal on renewable electricity grid link: Power Minister Raj Kumar Singh

ابو ظہبی(اے یوایس)متحدہ عرب امارات اور بھارت قابل تجدید توانائی کے ایک بڑے معاہدے کے قریب پہنچ گئے ہیں۔ یہ بات بجلی اور قابل تجدید توانائی کے بھارتی وزیر راج کمار سنگھ نے ابو ظہبی میں ‘انٹرنیشنل ری نیو ایبل انرجی ایجنسی’ کے حوالے سے اپنے دورے کے موقع پر کہی ہے۔بھارت آج کل اس بین الاقوامی ادارے کا صدر ہے۔ راج کمار سنگھ نے کہا یہ مجوزہ دو طرفہ معاہدہ حتمی شکل پانے کے قریب ہے۔ تاہم انہوں نے اس معاہدے کے لیے کسی متعین وقت یا مدت کا اشارہ نہیں دیا ہے۔سنگھ کا کہنا تھا ‘ امارات اور بھارت کے درمیان اماراتی الیکٹریسٹی گرڈ اور بھارتی گرڈ کے درمیان باہمی رابطہ اور تعلق ہے۔ اس لیے یہ اب ‘ ایک سورج ، ایک دنیا اور ایک گرڈ کے’ انیشیٹو’ کے قریب آئیں گے، جس کے تحت ممالک قابل تجدید توانائی منصوبے اور نیٹ ورک بنا رہے ہیں۔انہوں نے امارات کے ساتھ قابل تجدید توانائی کے ممکنہ معاہدے کے بارے میں دوبارہ کہا کہ دونوں ملکوں کا اس پر اتفاق ہے اس لیے انہیں یقین ہے کہ جلد نتائج سامنے آجائیں گے۔

خیال رہے ایک سورج ، ایک دنیا اور ایک گرڈ کا تصور بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی نے پیش کیا تھا۔ تاکہ موجود گرڈز کے ذریعے قابل تجدید توانائی کی ایک دوسرے کو ترسیل ممکن بنائی جائے۔راج کمار سنگھ نے اس بارے میں بات کرتے ہوئے مزید کہا ‘امارات کی طرف سے پہلے ہی اشارہ مل چکا ہے کہ امارات بھارت میں قابل تجدید توانائی منصوبوں پر سرمایہ لگا نے کو تیار ہے۔ ان منصوبوں میں شمسی توانائی کے علاوہ ہوائی توانائی کے منصوبے شامل ہیں۔بھارت اور امارات کے درمیان قابل تجدید توانائی کے سلسلے میں ایک مفاہمتی یادداشت پر 13 جنوری کو دستخط کیے جا چکے ہیں۔ جس کا اظہار امارات میں بھارتی سفارتخانے نے ایک ٹویٹ کے ذریعے کیا تھا۔ تاہم اماراتی وزارت خارجہ نے فوری طور پر اس بارے میں کوئی تبصرہ کرنے سے انکار کیا ہے۔

البتہ پچھلے سال امارات اور بھارت کے درمیان ایک بڑے تجارتی معاہدے پر دستخط کیے گئے تھے۔ اس معاہدے کے تحت تیل کے علاوہ شعبوں میں امارات اور بھارت کے درمیان تجارت کا حجم ایک سو ارب ڈالر تک بڑھایا جانا مقصود ہے۔دریں اثنا بھارتی وزیر نے موسمیاتی کانفرنس ‘سی او پی 28 ‘ کے لیے امارات کے میزبان بننے کی حمایت کی اور موسمیاتی کانفرنس 28 کے لیے امارات کے نامزد کیے گئے ایلچی سلطان الجابر کی حمایت کا اعلان کیا۔راج کمار نے جابر کو قابل تجدید توانائی کے حوالے سے کلیدی کردار ادا کرنے والی شخصیت قرار دیتے ہوئے ان کی وجہ سے موسمیاتی تبدیلیوں کے چیلنج کو نمٹنے میں مدد ملے گی۔