man cheat online to expenses of his 2 wifes

نئی دہلی(اے یو ایس)ضلع وسطی کے سائبر پولیس اسٹیشن نے 500 لوگوں کو آن لائن دھوکہ دینے والے شاطر شخص کو گرفتار کرلیا۔ ملزم اپنی پرانی کمپنی کا ڈیٹا چوری کرکے لوگوں کو دھوکہ دیتا تھا۔ ملزم دلیپ کمار ہے جو غازی آباد کے لال کنواں کا رہنے والا ہے۔ڈی سی پی کے مطابق ملزمان سے تین موبائل فون اور چھ سم کارڈ، سات بینک پاس بک، تین ڈیبٹ کارڈ، دو چیک بک اور شکایت کنندہ کمپنی سے چوری کیے گئے 15000 لوگوں کا ڈیٹا برآمد کیا گیا ہے۔

ملزم نے تین سال میں 500 لوگوں سے 12 لاکھ روپے کا جھانسہ دیا۔ اس نے فراڈ کے لیے 30 سم کارڈ استعمال کیے تھے۔پولیس افسر نے بتایا کہ ایک نجی کمپنی ٹولیکسو آن لائن پرائیویٹ لمیٹڈ کے مجاز نمائندے رنجن رائے نے آن لائن پورٹل پر شکایت درج کرائی۔ بتایا گیا کہ ان کی کمپنی اپنے ویاپر ویب پورٹل کے ذریعے ہندوستان میں صنعتی سامان بیچنے والوں اور سپلائی کرنے والوں کے لیے آن لائن ویب پر مبنی پلیٹ فارم مہیا کرتی ہے۔ دلیپ کمار شرما ان کے پلیٹ فارم کا استعمال کر رہے ہیں اور وہ اپنے پرانے گاہکوں کو دھوکہ دے کر انہیں دھوکہ دے رہے ہیں۔

پولیس نے ملزم کی بینک کی تفصیلات اور سی ڈی آر حاصل کرکے تفتیش کی جس کے بعد ملزم کو اس کے گھر سے گرفتار کرلیا گیا۔ملزم سے پوچھ گچھ کے دوران انکشاف ہوا کہ اس نے 2015-2017 کے دوران شکایت کنندہ کمپنی میں کام کیا تھا۔ بعد میں نوکری چھوڑ دی۔ اس کی شادی 2019 میں ہوئی۔ سال 2020 میں اس کا ایک اور لڑکی سے واسطہ پڑا اور اس سے شادی بھی کر لی لیکن دونوں بیویوں کے اخراجات برداشت کرنا اس کے لیے بہت زیادہ ہوتا جا رہا تھا۔ ایسے میں اس نے اپنی پچھلی کمپنی کے صارفین کا ڈیٹا چرایا۔ وہ کمپنی کے صارفین کو فون کرتا تھا۔ آن لائن شاپنگ پر پرکشش آفرز کے ساتھ انہیں راغب کرنا۔ اس کے بعد وہ سامان کی ادائیگی کے لیے بارکوڈ بھیجے گا۔ جب گاہک پیسے بھیجتا تھا تو وہ فون بلاک کر دیتا تھا۔