Australia, Japan sign ‘historic’ defence pact amid China concernsتصویر سوشل میڈیا

سڈنی: انڈو- پیسیفک خطے میں چین کا مقابلہ کرنے کے لیے آسٹریلیا اور جاپان نے دفاعی تعاون بڑھانے کے لیے جمعرات کے روز ایک تاریخی معاہدے پر دستخط کیے ۔ آسٹریلیا اور جاپان نے اس معاہدے کو ‘تاریخی’ قرار دیا ہے ، لیکن یہ چین کو ناراض کر سکتا ہے۔ایک ڈیجیٹل کانفرنس کے دوران اس معاہدے پر آسٹریلیائی وزیر اعظم ا سکاٹ موریسن اور جاپانی وزیر اعظم فومﺅ کیشیدہ نے دستخط کیے۔

موریسن نے کہا کہ یہ معاہدہ ‘آسٹریلین ڈیفنس فورسز اور جاپانی سیلف ڈیفنس فورسز کے درمیان اہم اور پیچیدہ عملی تعلقات کو مضبوط کرے گا۔انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا اور جاپان گہرے دوست ہیں۔ ہماری خصوصی اسٹریٹجک شراکت داری پہلے سے کہیں زیادہ مضبوط ہے، یہ ہماری مشترکہ اقدار، جمہوریت اور انسانی حقوق کے تئیں ہماری وابستگی اور آزاد، کھلے اور لچکدار ہند-بحرالکاہل خطے میں ہمارے مشترکہ مفادات کی عکاسی کرتی ہے۔

آسٹریلیا نے امریکہ اور برطانیہ کے ساتھ سہ فریقی معاہدے پر دستخط کیے تھے۔ اس کے تحت، امریکہ اور برطانیہ نے آسٹریلیا کو ایٹمی طاقت سے چلنے والی آبدوزوں کے حصول میں مدد کرنے کا وعدہ کیا۔ اس معاہدے نے چین کو ناراض کیا تھا۔ موریسن نے معاہدے کو تاریخی قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ معاہدہ دونوں ممالک کی فوجوں کے درمیان تعاون بڑھانے کے لیے ایک واضح فریم ورک طے کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان اور جاپان کے ساتھ امریکہ اور آسٹریلیا کا اسٹریٹجک ڈائیلاگ ایک کواڈ کے بھی کا رکن ہے اور آسٹریلیا اس میں بھی اپنا تعاون جاری رکھے گا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *