China warns us of strong actions if speaker of house of representative Nancy Pelosi visits Taiwanتصویر سوشل میڈیا

بیجنگ: (اے یو ایس ) چین کی وزارت خارجہ نے جمعرات کو کہا ہے کہ اگر امریکہ کے ایوان نمائندگان کی اسپیکر نینسی پیلوسی نے تائیوان جانے کے ارادے پر عمل در آمد کیا تو چین سخت اقدامات کرے گا۔نینسی پیلوسی جو امریکہ میں اپنے عہدے کے اعتبار سے صدر اور نائب صدر کے بعد تیسرے نمبر پر ہیں، خود مختار جزیرے کا اگست میں دورہ کرنے والی ہیں۔ چین اس خطے کو اپنا علاقہ قرار دیتا ہے۔ایوان نمائندگان کی اسپیکر نے اپریل میں یہ دورہ کرنا تھا لیکن انہوں نے کورونا ٹیسٹ مثبت آنے کے باعث اپنا دورہ تائیوان ملتوی کر دیا تھا۔نینسی پیلوسی اپنے پیش رو نیوٹ گنگرچ کے بعد تائیوان کا دورہ کرنے والی امریکہ کی پہلی اعلی ترین عہدیدار ہوں گی۔

گنگرچ 25 سال قبل تائیوان گئے تھے۔چین نے تائیوان کی فضائی حدود کے نزدیک پروازوں اور کسی حملے کے صورت میں ممکنہ جوابی کاروائیوں کے اظہار کے لیے مشقیں کی ہیں۔بیجنگ میں وزارت خارجہ کے ترجمان ڑاو لیجانگ نے معمول کی روزانہ بریفنگ کے دوران کہا کہ نینسی پیلوسی کا دورہ چین کی خود مختاری اور علاقائی سلامتی کو نقصان پہنچائے گا اور چین امریکہ تعلقات کی بنیاد پر تباہ کن اثرات مرتب کرے گا۔اگر امریکہ غلط راستے پرجانے پر مصر رہتا ہے تو چین اپنی خود مختاری اور علاقائی سلامتی کے تحفظ کے لیے سخت اور مضبوط اقدامات کرے گا۔

چین نے حالیہ دنوں میں تائیوان کو امریکہ کی جانب سے اسلحے کی فروخت پر بھی سخت بیانات دیے ہیں اور مطالبہ کیا ہے کہ واشنگٹن 108 ملین ڈالر کا اسلحہ تائیوان کو فروخت نہ کرے۔چین کی وزارت دفاع نے بھی منگکل کو اپنی ویب سائٹ پر لکھا کہ تائیوان کی علیحدگی کے کسی منصوبے اور غیر ملکی فورسز کی مداخلت کو سختی سے کچل دیا جائے گا۔دوسری جانب واشنگٹن اس بارے میں ’ سفارتی مخمصے‘ کی حکمت عملی پر کاربند ہے کہ آیا وہ تائیوان کے ساتھ چین کے تنازعے کی صورت میں اس کا دفاع کرے گا یا نہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *