Dutch PM apologises for Netherlands' role in slave tradeتصویر سوشل میڈیا

ایمسٹرڈم:(اے یو ایس )وزیر اعظم مارک روٹے نے دور غلامی میں اپنے ملک ہالینڈ کے تاریخی کردار اور اس کے نتائج کے لیے جو انھوں نے تسلیم کیا کہ آج تک جاری ہیں، کے لیے معافی مانگی ۔ روٹے نے ڈچ نیشنل آرکائیوز میں قومی سطح پر نشر ہونے والی تقریر میں کہا کہ آج میں ہالینڈ کی حکومت کی جانب سے، میں نیدرلینڈز کے ماضی کے اقدامات کے لیے معذرت خواہ ہوں۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج ہم جہاں ہیں، ہم واضح الفاظ میں غلامی کی مذمت کر سکتے ہیں جو انسانیت کے خلاف جرم ہے۔

ڈچ ریاست ان بے پناہ مصائب کی ذمہ داری لیتی ہے جو غلام بنائے جانے والوں اور ان کی اولادوں کے ساتھ کیا گیا ہے۔ ہم، ہالینڈ کے وزیر اعظم کی طرف سے معافی مانگنے کے امکان کے بارے میں ہیگ میں موجود انسانی حقوق کی آواز بلند کرنے والے سیاسی گروپ کہتے ہیں کہ قذاقیت کے اصل ذمہ دار بادشاہت کے ادارے ہیں۔ اس لیے معافی بھی بادشاہ الیگزینڈرر ولیم کو مانگنی چاہیے۔

بادشاہت کو ذمہ دار ٹھہرانے والے سیاسی گروپوں کا کہنا ہے کہ بادشاہ ولیم الگزینڈر کو ڈچ کے خاتمے کی 160 ویں سالگرہ کے موقع پر یکم جولائی 2023 کو معافی مانگنی چاہیے۔آنر اینڈ ریکوری نامی تنظم کے ذمہ دار روئے کائیکوسی گرونبرگ نے کہا یہ تاثر غلط ہے کہ آبائی طور پر غلام رہنے والوں اور اب غلامی کے خلاف کام کرنے والے کارکنوں سے مشاورت نہیں کی گئی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *