Hafiz Saeed sentenced to 31 years in prisonتصویر سوشل میڈیا

اسلام آباد: پاکستان کی ایک عدالت نے جمعہ کو 2008ممبئی حملوں کی سازش رچنے اور اس کو انجام دینے والے دہشت گرد گروپ لشکر طیبہ کے سرغنہ حافظ سعید کو دہشت گردی کے دو مقدمات میں مالی معاونت کے جرم میں 31 سال قید کی سزا سنائی ہے۔ عدالتی فیصلے میں کہا گیا ہے کہ ان دونوں مقدمات میں حافظ سعید کو کئی جرائم کا مرتکب پایا گیا ہے ۔حافظ محمد سعید، ج جن کے خلاف 2020 میں عدالت نے سزا سنائی تھی، اس وقت جیل میں ہیں۔

لشکر طیبہ کے سر غنہ کو کئی بار داخل زنداں کیا جا چکا ہے۔ اس پر 2008 کے ممبئی حملے میں ملوث ہونے کا الزام ہے جس میں متعدد امریکی شہریوں سمیت 160 افراد ہلاک ہوئے تھے۔سعید کو ماضی میں کئی معاملات ، بشمول 2001 اور 2006 کے ہندوستانی سرزمین پر حملوں میں ،کئی بار گرفتار اور رہا کیا جا چکا ہے۔امریکہ نے 2012 میں سعید کو گرفتار کرنے میں مدد دینے یا اس کا اتہ پتہ بتانے والے کو 10 ملین امریکی ڈالر بطور انعام دینے کا اعلان کیا تھا ۔ امریکہ اور کناڈا نے لشکر طیبہ کو 2000 کی دہائی کے اوائل میں دہشت گرد تنظیم قرار دیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *