Iranian protesters set fire to Ayatollah Khomeini's houseتصویر سوشل میڈیا

تہران :(اے یو ایس)ایران میں مظاہرین نے اسلامی انقلاب کے بانی آیت اللہ روح اللہ خمینی کے آبائی گھر کو نذر آتش کر دیا۔ سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیوز میں دیکھا جا سکتا ہے کہ مظاہرین آیت اللہ خمینی کے گھر کو آگ لگا رہے ہیں۔خبر رساں ایجنسیوں نے ویڈیو میں دکھائے گئے مقام کی تصدیق کی لیکن علاقائی حکام نے آگ لگانے کی وادات کی تردید کی ۔اسلامی انقلاب ایران کے بانی کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے ان کے آبائی گھر کو ،جس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ ان کی ولادت اسی گھر میںہوئی تھی،میوزیم بنا دیا گیا تھا۔ ان کی قیادت میں 1979 میں انقلاب آیا تھا۔

خمین میں مظاہرین نے حکومت مخالف نعرے لگائے، مظاہرین حکومت کے خاتمے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ حکومت کی جانب سے کریک ڈاؤن کے باوجود ایران میں مظاہرے جاری ہیں۔ایران میں حکومت مخالف احتجاج تیسرے مہینے میں داخل ہوگیا ہے۔ رواں ہفتے ’خونی نومبر 2019‘ کی برسی منانے کے لیے سینکڑوں مظاہرین سڑکوں پر نکلے تھے۔ نومبر 2019 میں ایندھن کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف احتجاج کے دوران سینکڑوں افراد ہلاک ہوئے تھے۔

رواں برس ستمبر میں 22 سالہ ایرانی کرد خاتون مہسا امینی کی ہلاکت کے خلاف احتجاج شروع ہوا تھا جو دنیا بھر میں پھیل چکا ہے۔ انسانی حقوق کی تنظیموں کا کہنا ہے کہ مہسا امینی کی ہلاکت کے خلاف مظاہروں میں 300 سے زیادہ افراد مارے گئے ہیں اور ہزاروں کو حراست میں لیا جا چکا ہے۔حکومت نے رواں ہفتے پانچ افراد کو سزائے موت سنائی ہے۔ حکومت نے کہا تھا کہ اشتعال پھیلانے والوں کے خلاف سخت اقدامات کیے جائیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *