Marriyum Releases Details Of Tax Exemption On Relief Goodsتصویر سوشل میڈیا

اسلام آباد:(اے یو ایس ) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ سیلاب متاثرین کے لیے مچھردانیوں، کشتیوں سمیت تمام امدادی اشیا کو ٹیکس سے استثنیٰ حاصل ہے۔مریم اورنگزیب نے متاثرین سیلاب کی امدادی اشیا پر ٹیکس استثنیٰ دینے سے متعلق کابینہ کے فیصلے کی تفصیلات جاری کر دیں۔جمعرات کو جاری کیے گئے بیان میں وفاقی وزیر اطلاعات نے کہا کہ وزیراعظم شہباز شریف کی ہدایت پر وفاقی کابینہ نے 30 اگست 2022 کو ٹیکس استثیٰ کی منظوری دی تھی، سیلاب متاثرین کی مدد کے لیے مچھردانیوں، کشتیوں سمیت تمام امدادی اشیا کو ٹیکس سے استثنیٰ حاصل ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ 30 اگست 2022 کو وفاقی کابینہ کی جانب سے ٹیکسوں سے استثنیٰ دینے کی منظوری پر فوری عمل ہوا تھا، وزارت خزانہ اور فیڈرل بیورو آ ف ریونیو (ایف بی آر) نے عمل درآمد کا ایس آر اوبھی جاری کردیا تھا۔مریم اورنگزیب کا مزید کہنا تھا کہ ضابطے کے تحت فلاحی کام کرنے والوں کو نیشنل ڈیزاسٹر منیجنمٹ اتھارٹی (این ڈی ایم اے) کا سرٹیفیکیٹ حاصل کرنا ہوگا۔یاد رہے 2 ستمبر کو ایدھی فاؤنڈیشن کے سربراہ فیصل ایدھی نے دعویٰ کیا تھا کہ سیلاب متاثرین کے لیے امدادی سرگرمیوں میں حصہ لینے والی 2 لاکھ روپے کی کشتی پر 4 لاکھ روپے ٹیکس ادا کیا ہے، وفاقی حکومت کو شرم نہیں آتی۔

اس حوالے سے اتوار کو ایک ٹوئٹ میں وزیر خزانہ مفتاح اسمعٰیل نے کہا تھا کہ ابھی فیصل ایدھی سے بات ہوئی ہے، ان کا کہنا ہے کہ ایدھی کا کوئی امدادی سامان کسٹم میں نہیں پھنسا ہے، سوشل میڈیا پر زیر بحث امپورٹڈ ریسکیو بوٹ پر ادا کی جانے والی ڈیوٹی کے بارے میں استفسار پر فیصل ایدھی نے تصدیق کی ہے کہ یہ معاملہ2020 کا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *