Mother and daughter drown in Saudi Arabiaتصویر سوشل میڈیا

ریاض:(اے یو ایس ) سعودی عرب میں جازان کے علاقے سیزن سیکٹر میں بارڈر گارڈ فورسز نے بتایا کہ جنوبی سمندر سے متصل راستے سے گذرتے ہوئے ایک خاتون اور بچہ پھسل کر سمندری پانی میں گر نے سے اور دو دیگر خواتین تیراکی کے دوران ڈوب کر جاں بحق ہوگئے ہیں۔سرحدی محافظوں نے سمندری پانی میں گر کر ہلاک ہونے کے انحے کے حوالے سے بتایا کہ خاتون اور اس کا بچہ فٹ پاتھ سے پھسلنے کے بعد ایک خطرناک علاقے میں ڈوب گئے، یہ پانی تیراکی کے لیے موزوں نہیں تھا۔

سیکیورٹی حکام واقعے کی تحقیقات کر رہے ہیں۔ جبکہ تیرنے کے دوران خواتین کی ہلاکت کے بارے میں ذرائع نے بتایا کہ جیزان میں فیکلٹی آف میڈیسن کے پیچھے سمندر کے ساحل پر تیراکی کرتے ہوئے 3 خواتین ڈوبنے لگیں ان کے شور مچانے پر سیزن سیکٹر میں سرچ اینڈ ریسکیو ٹیمیں ڈوبنے والی خواتین کو نکالنے میں کامیاب ہوگئیں لیکن اس وقت تک ان میں سے دو کی موت ہو چکی تھی اور تیسری زندہ بچ گئی، اسے ابتدائی طبی امداد فراہم کی گئی اور اسے علاج کے لیے ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

قابل ذکر ہے کہ جازان کے علاقے میں بارڈر گارڈ کمانڈ پکنک منانے والوں کو ممنوعہ جگہوں پر مچھلیاں پکڑنے، غوطہ خوری کرنے یا تیراکی کرنے کے خلاف مسلسل خبردار کرتی ہے۔ خلاف ورزی کرنے کی صورت میں ڈوبنے کے واقعات بھی پیش آ جاتے ہیں ، ہدایت نہ ماننے والوں کو سزائیں بھی دی جاتی رہتی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *