Schools closed in Swat after van attackتصویر سوشل میڈیا

سوات:(اے یوایس ) خیبرپختونخوا کے ضلع سوات میں اسکول وین پر نامعلوم دہشت گردوں کی فائرنگ سے ڈرائیور کے ہلاک اور اور 2 کمسن طلبا کے زخمی ہوجانے کے بعد احتجاج میں منگل کے روز سوات میں تمام پرائیویٹ اسکول بند رہے۔یاد رہے کہ پیر کے روز معمول کے مطابق سو زکی گاڑی صبح گھر سے بچوں کو اسکول جا رہی تھی کہ سوات کے علاقے گلی باغ میں نامعلوم ملزمان کی جانب سے اس پر حملہ کیا گیاجس میں نجی اسکول کی سوزوکی گاڑی کا ڈرائیور محمد حسین موقع پر جاں بحق ہوگیا، واقعہ میں دو عالب علم بھی زخمی ہوئے، تیسری جماعت کا طالب علم منون ولد سیف اللہ کو 3 گولی لگی ہیں۔

صدر آل سوات پرائیویٹ اسکول اسکولز ایسوسی ایشن ثواب خان نے کہا کہ سو زکی گاڑی معمول کے مطابق صبح گھر سے بچوں کو اسکول کر آرہی تھی کے سوات کے علاقے گلی باغ میں یہ واقع پیش آیا۔لہٰذا سوات کے تمام پرائیویٹ اسکول کل احتجاجاً بند رہیں گے۔

واضح رہے کہ اس مقام پر 10سال بعد دوبارہ اسکول وین پر حملہ ہوا ہے جب کہ اس سے قبل نوبیل انعام یافتہ ملالہ یوسف زئی کی گاڑی پر حملہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگئی تھیں۔اسکول وین پر فائرنگ کے خلاف سوات میں عوام نے احتجاجی مظاہرہ کیا اور ملزمان کی فوری گرفتاری کا مطالبہ کیا۔مشتعل مظاہرین کا کہنا تھا کہ جب تک قاتلوں کو گرفتار نہیں کیا جا سکتا اس وقت تک احتجاج جاری رہے گا۔مظاہرین کا کہنا تھا کہ ہم امن چاہتے ہیں، حکومت ہمیں امن و امان اور تحفظ فراہم کرے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *