Thousands of British holidaymakers cancel trips to India owing to tourist visa rule changeتصویر سوشل میڈیا

لندن: ویزا ضابطوں میں آخری لمحات یں ترمیم ہونے کے باعث تعطیلات منانے والے ہزاروں برطانوی شہری ہندوستان آکر اپنی تعطیلات گذارنے کا پروگرام منسوخ کرنے پر مجبور ہو گئے کیونکہ نئے ضابطوں کی روسے ٹورسٹ ویزا کی درخواست دینے والوں کو اب شخصی طر پر ویزا مراکز میں پیش ہونا پڑے گا لیکن ان برطانوی شہریوں کی پروازوں کی روانگی سے قبل کوئی اپائنٹمنٹ دستیاب نہیں تھا۔اب تک ہندوستان میں تعطیلات گزارنے والے ہزاروں برطانوی ویزا ایجنٹوں پر انحصار کرتے تھے تاکہ ان کے لیے ہندوستان کا سیاحتی ویزہ حاصل کیا جا سکے۔

لیکن گذشتہ پیر کی شام کو ایجنٹس کو ایک اطلاع ملی کہ اب درخواست دہندگان کی جانب سے ویزا ایجنٹوں کو اب سیاحتی ویزا حاصل کرنے کی اجازت نہیں ہے اور اس کے بجائے درخواست دہندگان کو خود کو ویزا مراکز میں ذاتی طور پر پیش کرنا ہوگا۔اب تک ہزاروں برطانوی ہو انڈس ایکسپیریئنس لندن کے مینیجنگ ڈائریکٹر یاسین زرگر نے ، جو کہ ہندوستان کی سیاحت میں دلچسپی رکھنے والوں کے لیے دوروں اورتعطیلات گذارنے کا اپنی مرضی کے مطابق اہتمام کرتے ہیں، کہا کہ اگلے دو مہینوں کے لیے کوئی ملاقاتیں دستیاب نہیں ہیں خواہ وہ ذاتی طور پر ہی کیوں نہ جائیں ویزا حاصل نہیں کر سکتے۔ ویز لینے کے لیے آن لائن اپائنٹمنٹ لینے کے علاوہ کوئی دوسرا متبادل نہیں ہے۔

جبکہ ویا چاہنے والے ہمارے پاس بغیر وقت لیے آتے ہیں انہیں واپس کر دیا جاتا ہے۔ یہ ہمارے لیے سخت تکلیف کا باعث ہے اور ہمار کاوبار تعطل کا شکار ہو گیا ہے۔ہمیں 27 اور 29 اکتوبر کو سیاحوں کو ہندوستان بھیجنا ہے اور ہمیں 42,000 پاو¿نڈ کے نقصان کا سامنا ہے کیونکہ ہمیں ویزا مانگنے والوں کو ان کے پاسپورٹ بغیر ویزے کے واپس کرنے پڑے۔ وہ ہمیں پیشگی ادائیگی کر چکے تھے اور ہم نے انہیں ٹکٹ جاری کر کے بیرون ملک سپلائرز کو ادائیگی بھی کر دی۔ ان سپلائرز نے جواباً اندرون ملک ٹکٹوں کی ادائیگی کر دی ہے ۔ لیکن اگر ہمارے کلائنٹس کے پاس ویزا نہیں ہے تو وہ سفر نہیں کر سکتے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *