Turkey Suspends Khashoggi Trial, Transfers It to Saudi Arabiaتصویر سوشل میڈیا

تہران: ترکی کی ایک عدالت نے واشنگٹن پوسٹ کے سعودی عرب نژاد کالم نویس جمال خاشقجی کے قتل کیس کے 26سعودیوں پر ان کے غائبانے میں چلائے جانے والے مقدمہ کی کارروائی معطل کر کے کیس سعودی عرب منتقل کرنے کا حکم دے دیا۔ 59سالہ صحافی کو2اکتوبر 2018کو استنبول میں واقع سعودی قونصل خانے میں ہلاک کیا گیا تھا۔

گذشتہ ہفتہ استغاثہ نے غائبانہ میں چلائے جارہے مقدمے کو سعودی عرب منتقل کرنے کی استدعا کی تھی۔ ترکی کے وزیر قانون و انصاف نے بعد ازاں کہا کہ حکومت اس درخواست کو منظور کر لے گی۔ استنبول عدالت نے 31مارچ کو استغاثہ کی داخل کردہ استدعا کو تسلیم کرتے ہوئے اعلان کیا کہ ہم نے اس مقدمہ پر مزید سماعت اپنے یہاں روک کر اسے سعودی عرب منتقل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

یہ فیصلہ انسانی حقوق گروپوں کے ان انتباہوں کے باوجود کہ، مقدمہ اگر سعودی عرب منتقل کیا گیا تو اسے سرد خانے میں ڈال دیا جائے گا اور اس کی لیپا پوتی کر کے داخل دفتر کر دیا جائے گا،ترک عدالت نے یہ فیصلہ کیا۔ واضح ہو کہ امریکی انٹیلی جنس کی رپورٹ میں اس قتل سے ولیعہد شہزادہ محمد بن سلمان کا تعلق بتایا جا رہا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *