U.S. treasury thwarted cyber attack by Russian hacker groupتصویر سوشل میڈیا

ماسکو:(اے یو ایس ) امریکی وزارت خزانہ کے ایک اہلکار نے انکشاف کیا ہے کہ ایک روس نواز ہیکر گروپ نے گذشتہ ماہ وزارت کے کمپیوٹر سسٹم کو نشانہ بنایا تھا، لیکن اسے ناکام بنا دیا گیا۔انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ مالیاتی نظام کے لیے سائبر سکیورٹی کے لیے وزارت کا بہتر طریقہ کار اچھا کام کر رہا ہے۔ نائب وزیر مالیات ولی اڈیمو کے سائبر سلامتی مشیر ٹوڈ کونکلن نے ’رائیٹرز‘ کو بتایا کہ ڈپارٹمنٹ نے ڈسٹری بیوٹڈ ڈینیئل آف سروس حملوں کی ذمہ داری کیلنیٹ پر عائد کی ہے جو وہ روسی ہیکر گروپ ہے جس نے گذشتہ اکتوبرمیں کئی امریکی ریاستوں اور ہوائی اڈوں کی ویب سائٹس کو درہم برہم کرنے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔قابل ذکر ہے کہ ایک سینیر امریکی اہلکار نے گذشتہ ماہ انکشاف کیا تھا کہ سائبر حملوں میں 10 اکتوبر کو امریکا کے کچھ بڑے ہوائی اڈوں کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

ذرائع نے اے بی سی نیوز کو بتایا کہ یہ کارروائی روسی فیڈریشن کے اندر ایک حملہ آور نے کی۔خوش قسمتی سے ان ہوائی اڈوں کے لیے ٹارگٹ سسٹم ایئر ٹریفک کنٹرول، ایئر لائن کمیونیکیشن اور کوآرڈینیشن، یا ٹرانسپورٹیشن سکیورٹی سسٹم کو زیادہ نقصان نہیں پہنچا۔تاہم ان حملوں کی وجہ سے مسافروں کی ان ویب سائٹس تک رسائی روک دی جو انتظار کے اوقات اور ہوائی اڈے پر ہجوم کو ظاہر کرتی ہیں۔ہوائی اڈوں نے سب سے پہلے صبح 3 بجےای ٹی ٹی کے قریب حملوں کی اطلاع دی جب سائبرسکیوریٹی اور انفراسٹرکچر سکیورٹی ایجنسی نے اطلاع دی کہ لاگارڈیا ہوائی اڈے کے نظام کو نشانہ بنایا گیا تھا، لیکن اسے بحال کر دیا گیا تھا۔

لیکن ملک بھر کے دیگر ہوائی اڈے پہلے ہی متاثر ہو چکے ہیں۔10 اکتوبر کی صبح ڈیس موئنز انٹرنیشنل ایئرپورٹ، لاس اینجلس انٹرنیشنل ایئرپورٹ اور شکاگو او’ہیئر انٹرنیشنل ایئرپورٹ کی ویب سائٹس بھی متاثر ہوئیں۔ہارٹسفیلڈ–جیکسن اٹلانٹا انٹرنیشنل ایئرپورٹنے صبح 10:30 بجے ای ڈی ٹی کے بارے میں اطلاع دی کہ اس کی سائٹ دوبارہ کام کر رہی ہے اور یہ کہ “ہوائی اڈے پر آپریشن کسی بھی وقت متاثر نہیں ہوئے۔ اے بی سی نے رپورٹ کیا کہ پروگرامرز اور انجینیر ان خامیوں کو بند کرنے کے لیے کام کر رہے ہیں جو ہیکرز کو ویب سائٹس ہیک کرنے کی اجازت دیتے ہیں۔یہ واقعہ ایک طرف ماسکو اور دوسری طرف واشنگٹن اور مغرب کے درمیان بڑھتی ہوئی کشیدگی کے دوران سامنے آیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *