US willing to provide Pakistan with funds to prevent attacks from Afghanistan: Bilawal Bhuttoتصویر سوشل میڈیا

اسلام آباد: پاکستان کے وزیر خارجہ بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ امریکہ پاکستان میں افغانستان سے حملوں کو روکنے اور سرحدی سکیورٹی بڑھانے میں مدد کے لیے پاکستان کو فنڈز فراہم کرنے کا خواہشمند ہے۔ یہ بات اتوار کو میڈیا میں آنے والی ایک خبر میں کہی گئی ہے۔ ڈان اخبار کی خبر کے مطابق، 14 سے 21 دسمبر کے دوران امریکہ کا دورہ کرنے والے بھٹو نے کہا کہ انہوں نے 2023 میں دیے جانے والے بارڈر سکیورٹی فنڈز پر سینئر امریکی قانون سازوں کے ساتھ بات چیت کی۔اپنے دورے کے دوران، بھٹو نے اعلی امریکی پالیسی سازوں کے ساتھ بات چیت کی اور جی77- اور چین کے درمیان وزارتی کانفرنس کی صدارت کی۔ جی77- ا اقوام متحدہ میں ترقی پذیر ممالک کا سب سے بڑا مذاکراتی گروپ ہے۔

سوالوں کا جواب دیتے ہوئے، بھٹو نے صحافیوں کو بتایا کہ دو سینئر قانون سازوں – نیو جرسی کے باب مینینڈیز اور ساو¿تھ کیرولینا کے لنڈسے گراہم نے مجھے بتایا کہ وہ ہمیں سرحدی سکیورٹی میں مدد پہنچانے کے لئے 2023 کے بجٹ میں فنڈ فراہم کررہے ہیں۔ امریکی سینیٹ کی خارجہ تعلقات کمیٹی کے چیئرمین ہیں، جبکہ سینئر ریپبلکن کانگریس مین گراہم سینیٹ کی عدلیہ کمیٹی کے چیئرمین ہیں۔19دسمبر کو واشنگٹن میں ایک پریس کانفرنس میں، امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے نوٹ کیا کہ کالعدم تنظیموں جیسا کہ تحریک طالبان پاکستان، جو افغانستان سے کام کرتی ہیں، نے حال ہی میں پاکستانی اہداف پر حملوں میں اضافہ کیا ہے۔ انہوں نے اس بڑھتے ہوئے خطرے سے نمٹنے کے لیے امریکہ کی جانب سے پاکستان کی مدد کرنے کی پیشکش کی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *