UAE encourages political solutin of Ukraineتصویر سوشل میڈیا

ابوظہبی:(اے یوایس)متحدہ عرب امارات کے صدر کے سفارتی مشیر انورقرقاش نے اتوار کے روز کہا ہے کہ ان کا ملک یوکرین تنازع کے فوجی حل کو مسترد اور سیاسی تصفیے کی حوصلہ افزائی کرتا ہے۔انھوں نے ٹویٹر پر ایک بیان میں کہا:”ہمیں یقین ہے کہ کسی فریق کی طرف داری سے تشدد میں اضافہ ہوگا۔ ہماری ترجیح یوکرین بحران کے تمام فریقوں کو سفارت کاری اور مذاکرات کی ترغیب دینا ہے تاکہ اس تنازع کے خاتمے کے لیے سیاسی تصفیے تک رسائی حاصل کی جا سکے۔

انھوں نے یہ بھی کہا کہ متحدہ عرب امارات اقوام متحدہ کے بنیادی اصولوں، بین الاقوامی قوانین اور ممالک کی خودمختاری کے حوالے سے ”سخت مو¿قف“ رکھتا ہے۔انورقرقاش نے کہا کہ یوکرین میں تنازع کے نتیجے میں دنیا کو جس تیزی سے” پولرائزیشن“کا سامنا ہے‘اس سےعدم استحکام کے عوامل میں اضافہ ہوتا ہے۔انھوں نے مزید کہا کہ ”تنازعات سے بھرپورخطے میں اپنے تجربے کی بنیاد پر ہمیں یہ یقین ہے کہ سیاسی حل تک پہنچنا اورسلامتی اوراستحکام کو مضبوط بنانے کے لیے توازن پیدا کرنا ہی بحرانوں کا مقابلہ کرنے اور ان کے نتائج کو کم کرنے کا بہترین طریقہ ہے“۔

روسی صدر ولادی میرپوتین نے جمعرات کو یوکرین پر مکمل حملے کا حکم دیا تھا۔جمعہ کو روس نے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرارداد کے مسودے کو ویٹو کردیاتھا۔اس میں ماسکو کے یوکرین پرحملے پر افسوس کا اظہار کیا گیا تھاجبکہ چین، بھارت اور متحدہ عرب امارات نے رائے شماری میں حصہ نہیں لیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *